Home > Uncategorized > Khalid Shareef – muntakhab asha’ar

Khalid Shareef – muntakhab asha’ar

  خالد شریف  اہور ، پاکستان کے ایک بڑے شاعر ، جنہیں آج تک وہ مقام نہیں مل سکا، جس کے و ہ مستحق  ہیں.-  خالد صاحب  ستایش و صلے سے بے نیاز، اپنے کام پہ توجہ رکھتے ہیں-آپ کے چند منتب اشعار احباب کی نذرکر رہا ہوں-

جو  ہر  مقام  پر  تجھے  وحشت  میں  چھوڑ دے

اک دن اسے بھی غم کی مسافت میں چھوڑ دے

خوش  آ   گئ   ہے    لذت ِ   سنگ ِ سخن   مجھے

اے دوست مجھ کو کوئے ملامت میں چھوڑ دے

میں ایسا جنگ جُو ہوں جو  میدانِ جنگ میں

دشمن کو زیر کر کہ مروّت میں چھوڑ دے

اُس  کا   مزاج  ہے  یہ   اُسی  کا  مزاج   ہے

نفرت میں ساتھ رکھ لے محبت میں چھوڑ دے

                                                                                                                        

اس   کھوکھلے  سماج  سے  ہونے  دے  آشنا

کچھ روز اُس کو کوچہ  ے شہرت میں چھوڑ دے

”””””””””””””””””””””””””””’

حالتِ   کفر  بھی  ایمان  میں  رکھی  ہوئ    ہے

ایک صورت جو مرے دھیان میں رکھی ہوئ ہے

روزِ  اوّل  جو  پڑھی  تھی تیری  یادوں کی کتاب

میں نے بچپن سے وہ جزدان میں رکھی ہوئ ہے

جو   ابھی   طبل  و  عَلم  لے   یہاں   آیا   تھا

لاش اس شخص کی میدان میں رکھی ہوئ ہے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جب سے اِ س دل کو تیرے نام پہ رکھا ہوا ہے

ہم نے  اس  شہر  کو  دشنام  پہ  رکھا  ہوا  ہے

شام سے سوچ رہا ہوں کہ یہ پیغام ہے کیا

اُس  نے  جو  ایک  دیا  بام پہ رکھا ہوا ہے

صبح سے  شام  اسی کوچہ  میں  ہو جاتی ہے

اُس نے بس مجھ کو اِسی کام پہ رکھا ہوا ہے

شعر تب کہتے ہیں جب ہوتی ہے آمد خالد

ہم  نے  آورد  کو  الہام  پہ  رکھا  ہوا   ہے

   Syed Anis ul Hassan ANIS HASSAN

Categories: Uncategorized
  1. No comments yet.
  1. No trackbacks yet.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: