Home > Urdu poems and prose latest > Ada Jafri – ghazal

Ada Jafri – ghazal

غزل –محترمہ ادا جعفری

————————-

 

جب دل کی رہگزر پہ ترا نقش _پا نہ تھا

جینے کی آرزو تھی مگر حوصلہ نہ تھا

 

دامان _ چاک چاک گلوں کو بہانہ تھا

ورنہ نگاہ و دل میں کوئی فاصلہ نہ تھا

 

آگے حریم _ غم سے کوئی راستہ نہ تھا

اچّھا ہوا کہ ساتھ کسی کو لیا نہ تھا

 

سنسان دو پہر ہے بڑا جی اداس ہے

کہنے کو ساتھ ساتھ ہمارے زمانہ تھا

 

 ہر آرزو کا نام نہیں آبروے جاں

ہر تشنہ لب جمال _ رخ _ کربلا نہ تھا

 

آندھی میں برگ _ گل کی زباں سے ادا  ہوا

وہ راز جو کسی سے ابھی تک کہا نہ تھا

  1. No comments yet.
  1. No trackbacks yet.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: