Home > Urdu poems and prose latest > احمد علی برقی اعظمی Tarhi Ghazal

احمد علی برقی اعظمی Tarhi Ghazal

الف کے آن لائن فی البدیہہ طرحی مشاعرے بیادِ ناصر کاظمی بتاریخ ۳ مارچ ۲۰۱۲ کے لئ غزلِ مسلسل

ہر طرف اس کا ہی جلوا ہوگا

’’چاند کس شہر میں اُترا ہوگا‘‘

ہے جو اب میری نظر سے روپوش

تم نے شاید اسے دیکھا ہوگا

 مجھ پہ جو گذری نہ اس پر گذرے

جانے کس حال میں تنہا ہوگا

 کئی راتوں سے نہ سویا ہوں میں

وہ بھی کیا ایسے ہی جاگا ہوگا

میں ہوں راضی بہ رضائے دلبر

ناطقہ بند نہ میرا ہوگا

روح فرسا ہے بہت لمحۂ ہجر

حالِ دل کس سے وہ کہتا ہوگا

 دل یہ اب کہتا ہے میرا برقی

جو ہواہوگا وہ اچھا ہوگ

  1. No comments yet.
  1. No trackbacks yet.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: