Home > Uncategorized > Ghazal by Nashtar Khairabadi

Ghazal by Nashtar Khairabadi

غزل

نشتر خیرابادی

سَر تیرے آستاں پہ جُھکائے  ہوئے ہیں ہم

یعنی فرازِ  عرش پہ چھائے  ہوئے    ہیں    ہم

گُمُ  کردہ  راہِ  کعبہ و  بُتخانہ اب  سے   دُور

اِن منزلوں کی  خاک  اُڑائے  ہوئے ہیں ہم

حا صِل ہمیں ہے  لُطفِ بہارِ جمالِ  دوست

میخانہ  آج  سَر پہ  اُٹھائے  ہوئے    ہیں ہم

آ شیخ  میکدے   میں  ترِی   عاقِبت  بخیر

رحمت کو بوتلوں میں  چھُپائے  ہوئے ہیں ہم

نشتر تصّور رُخِ  تاباں ہے رات دِن

غم کو بہت حَسین بنائے ہوئے ہیں ہم

Advertisements
Categories: Uncategorized
  1. No comments yet.
  1. No trackbacks yet.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: